Thursday, June 10, 2010

عورت کو مطمئن کرنا نا ممکن ہے"

بازا میں ایک دکان کھلی جو شوہروں کو فروخت کرتی ہے ' اس دکان کے کھلتے ہی لڑکیوں اور عورتوں کا اژدہام اس بازار کی طرف چل پڑا - دکان کے داخلہ پر ایک بورڈ رکھا تھا جس پر لکھا تھا - اس دکان میں کوئی بھی عورت یا لڑکی صرف ایک وقت ہی داخل ہو سکتی ہے " پھر نیچے ھدایات دی گئی تھیں کہ : " اس دکان کی چھ منزلیں ہیں ہر منزل پر اس منزل کے شوہروں کے بارے میں لکھا ہو گا ' جیسے جیسے منزل بڑھتی جائے گی شوہر کے اوصاف میں اضافہ ہوتا جائے گا خریدار لڑکی یا عورت کسی بھی منزل سے شوہر کا انتخاب کر سکتی ہے ' اور اگر اس منزل پر کوئی پسند نہ آئے تو اوپر کی منزل کو جا سکتی ہے - مگر ایک بار اوپر جانے کے بعد پھر سے نیچے نہیں آسکتی سوائے باھر نکل جانے کے - " ایک عورت جو جوان اور خوبصورت تھی دکان میں داخل ہوئی - پہلی منزل کے دروازے پر لکھا تھا - " اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں اور الله والے ہیں - دوسری منزل کے دروازہ پر لکھا تھا " اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ' الله والے ہیں ' اور بچوں کو پسند کرتے ہیں " تیسری منزل کے دروازہ پر لکھا تھا - " اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ' الله والے ہیں ' بچوں کو پسند کرتے ہیں اور خوبصورت بھی ہیں " یہ پڑھ کر عورت کچھ دیر کے لئے رک گئی ' مگر پھر یہ سوچ کر کہ چلو ایک منزل اور جا کر دیکھتے ہیں وہ اوپر چلی گئی - چوتھی منزل کے دروازہ پر لکھا تھا - " اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ' الله والے ہیں ' بچوں کو پسند کرتے ہیں ' خوبصورت ہیں اور گھر کے کاموں میں مدد بھی کرتے ہیں " یہ پڑھ کر اس کو غش سا آنے لگا ' کیا ایسے بھی مرد ہیں دنیا میں ؟ وہ سوچنے لگی کہ شوہرخرید لے اور گھر چلی جائے ' مگر دل نہ مانا ' وہ ایک منزل اور اوپر چلی آئی - وہاں دروازہ پر لکھا تھا - " اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ' الله والے ہیں ' بچوں کو پسند کرتے ہیں ' بیحد خوبصورت ہیں ' گھر کے کاموں میں مدد کرتے ہیں اور رومانٹک بھی ہیں " اب اس عورت کے اوسان جواب دینے لگے - وہ خیال کرنے لگی کہ ایسے مرد سے بہتر بھلا اور کیا ہو سکتا ہے مگر اس کا دل پھر بھی نہ مانا وہ چھٹی منزل پر چلی آئی یہاں بورڈ پر لکھا تھا " آپ اس منزل پر آنے والی 3448 ویں خاتون ہیں - اس منزل پر کوئی بھی شوہر نہیں ہے - یہ منزل صرف اس لئے بنائی گئی ہے تا کہ اس بات کا ثبوت دیا جا سکے کہ "عورت کو مطمئن کرنا نا ممکن ہے" آگے لکھا تھا ہمارے اسٹور پر آنے کا شکریہ ' سیڑھیاں باھر کی طرف جاتی ہیں۔

2 comments:

imran said...

bhai aap sachaay ho aur khawa3 bhi sachi hain.

DuFFeR - ڈفر said...

یار آتے ہی پھڈے پانا شروع کر لیے تو نے
تو کیا چاہتا ہے کہ یہ بلاگ صرف مردانہ تبصروں سے ہی سجا رہے؟ تیری تصویر بلاگ میں کوئی رنگ نہ ہوں؟
اس دکان کی کوئی سسٹر کمپنی نہیں جو بیگمات سے متعلق یہ بزنس کرتی ہو؟
فیر میں تو پہلی منزل سے ہی خریداری کر کے لوٹ آؤں
ویسے دبئی کی "دکانوں" کے متعلق سنا ہے کہ وہاں پہ اوپر جانے کا مطلب قیمت و معیار پہ سمجھوتہ کرنا ہوتا ہے
نوٹ: مذکورہ دکانیں بیگمات و شوہروں کی خریداری کے لیے نہیں ہوتیں
دوسرا نوٹ: کیونکہ ترے بلاگ پہ تبصروں میں پڑھا کہ ریٹڈ قسم کا بلاگ ہے اس لیے لکھ دیا یہ سب
لیکن ابھی تک مجھے کہیں نظر نی آیا اس لیے ہتھ ہولا رکھا
آپ نے کہیں لکھ کے مٹا تو نی دیا؟